کچھ کلام تو کر۔ ۔ ۔

کچھ کلام تو کر چاہے برساتِ الزام ہی کر
کچھ کھیل تو کھیل    چاہے فریب ہی کر

سرے محفل چھیڑ بات ہمارے عشق کی
تعریف  نہ   سہی،    کوئی طنز     ہی کر

نا جان لے ہمارے دشمنوں کی، جلا ہی دے
نا مداح بن، سامنے انکے میرا نام ادا ہی کر

نہ    مانگ    ہمیں    ہاتھ     پھیلا   کر خدا سے
چھپ کر کسی کونے میں، عشق کی فریاد ہی کر

نا   بجا    ہمارے    پیار    کی     پیاس       ظالم
کسی پیاسے پرندے کی خاطر پانی رکھ دیا ہی کر

نا سن میری گذارشیں، نا کر پوری التجا خیامٓ
کوئی اپنی حسرت،  کوئی خواہش بیان ہی کر

بارش ہے، ٹھنڈی ہوا ہے اور حسین ہے موسم۔ ۔ ۔

بارش ہے، ٹھنڈی ہوا ہے اور حسین موسم
تم بیٹھے بھیگ رہے ہو وہاں اور یہاں اکیلے ہم
کیوں بضد ہو؟ بار بار بلاتے ہو اپنے پاس
دیکھو بہت قاتل ہے ہوا اور خراب ہے موسم
قطرہ قطرہ بارش کا لگا رہا ہے تن میں آگ
کہیں اس رومانوی موسم میں نہ رنگ جائیں ہم
کہیں یہ مدہوش کر دینے والا موسم نہ بن جائے بہانہ
لپیٹ میں آئےان شرارتی ہواؤں میں خراب نہ ہوجائیں ہم
خاموش کیوں ہو گئے؟ کچھ تو بات کرو اب
مدہوشی میں نہ مل جائیں آنکھیں کہیں اور نہ گم ہو جائیں ہم
نا ہو ختم شرم و حیا، نا گریں اپنی ہی نظروں میں ہم
سنو خیامٓ! فون بند کرو، اپنے اپنے گھر ہی سو جائیں ہم

An Imaginary Character

An imaginary character I built to fill up the blank space of my life. . . A place specified for my ultimate life partner. . . I picked perfect words to describe her and kept them in a treasure. . . A treasure, when I’ll open and present to her. . . Will describe her what I feel about her. . . Will tell her that no one else have ever told her about herself. . . The sterling words from the pure heart, arranged by help of mind. . . A flawless definition of her with the superlative degrees of vocables. . . It took years to collect pearls beneath the ocean of amour. . . A love of imagination for a clear unambiguous image. . . But when that imaginary character appeared in reality. . . When I saw you. . . I stuck in the moment. . . Just imagine when you face your imagination in reality. . . A period of being grateful started. . . Yes I have gotten my dream girl. . . I entered to my treasure of words. . . To describe you, to tell you that what you’re and what you’re for me. . . I’m hanging over there to arrange those words in such a way that I can express my feelings & emotions perfectly for a perfect partner for me. . . . . . . . . . . .